ٹورانٹو: یونیورسٹی آف ٹورانٹو کینیڈا میں ماہرین نے ہوا کی کاربن ڈائی آکسائیڈ جذب کرکے اسے ایندھن میں تبدیل کرنے کا ایک بالکل ہی نیا طریقہ ڈھونڈ نکالا ہے جس میں مٹی کی تشکیل کرنے والا عنصر یعنی سلیکان استعمال کیا گیا ہے۔

کازی ایندھن (فوسل فیول) جلانا ہماری ضرورت بھی ہے اور مجبوری بھی، لیکن یہی رکازی ایندھن جلانے کے نتیجے میں ہر سال ہوا میں تقریباً 36 ارب ٹن کاربن ڈائی بھی شامل ہوجاتی ہے جس کی وجہ سے زمین کا درجہ حرارت بھی مسلسل بڑھتا جارہا ہے۔ ہوا میں موجود کاربن ڈائی آکسائیڈ کو دھوپ مزید پڑھیں